تازہ ترین

ماچس کی تیلیوں سے حیرت انگیز فن پارے بنانے والا شخص

زگریب – کروشیا سے تعلق رکھنے والے ایک آرٹسٹ ٹومیسلاو ہورواٹ اگرچہ ماچس کی تیلیوں سے مجسمے بنانے والے پہلے شخص نہیں ہیں تاہم وہ اپنے کام کو لے کر دوسروں سے زیادہ پرجوش اور سنجیدہ دکھائی دیتے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹومیسلاو ہورواٹ نے 6 سال قبل ماچسوں سے مجسمے بنانے شروع کیے۔ آغاز میں انہوں نے چھوٹے ماڈل سے شروعات کی لیکن 2013 میں انہوں نے انسانی قدوقامت کے مجسمے بنانے شروع کر دیے۔

ٹومیسلاو کے فن پاروں میں ہالی ووڈ کے لیجنڈری اداکار ایل پیچینو کا بھی مجسمہ ہے جو مشہور زمانہ فلم گاڈ فادر میں ان کے کردار سے منسوب ہے۔ بقول ٹومیسلاو، ایل پیچینو کا یہ مجسمہ ان کے تمام کاموں میں سرفہرست ہے۔

ٹومیسلاو کا کہنا تھا کہ ایل پیچینو کے بعد دوسرے نمبر پر ان کا بڑا کام ’دی پیانسٹ‘ ہے اور تیسرے نمبر پر ’ڈیسپریٹ مین‘ ہے جو 54,000 ماچسوں سے بنا ہے۔

دی پیانسٹ کی بات کی جائے تو آرٹسٹ نے 210,000 ماچسوں سے پیانو اور اسے بجارہے ایک موسیقار کا مجسمہ بنایا ہے۔ تاہم ان کا کہنا ہے کہ مجھے اسے مکمل کرنے کے لیے مزید 30,000 ماچسوں کی ضرورت ہے جو کہ کل 430,000 بنتی ہیں۔ میں اس پر 6 سال سے کام کررہا ہوں۔

فلم گاڈ فادر کے ایل پیچینو کا مجسمہ 117,000 ماچسوں سے بنا ہے۔ ٹومیسلاو نے دارالحکومت زگریب سمیت کروشیا کی کئی گیلریوں میں اپنے کاموں کی نمائش کی ہے لیکن ان کے فن پارے ابھی فی الحال برائے فروخت کے لیے نہیں ہیں۔