تازہ ترین

پاکستان مخالف انڈین فلم کو انٹرنیشنل باکس آفس پر بڑے نقصان کا سامنا

ممبئی – بالی وڈ اسٹار ہریتھک روشن اور دیپیکا پڈوکون کی پاکستان مخالف فلم ‘فائٹر’ کو باکس آفس پر بڑے نقصان کا سامنا ہے۔ تمام خلیجی ممالک نے ’فائٹر‘ کی ریلیز پر پابندی عائد کی ہوئی ہے جبکہ متحدہ عرب امارات نے فلم کے نئے ورژن کو بھی نمائش دینے سے انکار کردیا ہے۔

بھارتی میڈیا ذرائع کے مطابق اب پاکستان مخالف فلم یو اے ای میں بھی ریلیز نہیں ہوگی جس کی وجہ سے اسے دو ملین ڈالر کا نقصان برداشت کرنا پڑے گا۔

شاندار آغاز کے باوجود بھی ہریتھک روشن اور دیپیکا پڈوکون کی فلم ‘فائٹر’ باکس آفس پر زیادہ دن تک حکمرانی نہیں کرسکی اور بھارتی میڈیا نے فلم کو ریلیز کے پانچویں دن فلاپ قرار دے دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق فلم ‘فائٹر’ ریلیز کے چوتھے دن 200 کروڑ کے کلب میں داخل ہوگئی تھی جبکہ پانچویں دن فلم کے بزنس میں 70 سے 80 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی جس کے بعد پاکستان مخالف فلم کو فلاپ قرار دے دیا گیا۔

مزید پڑھیں: پاکستان مخالف فلم، شوبز اسٹارز کی دیپیکا اور ہریتھک روشن پر کڑی تنقید

فلمی تجزیہ کاروں کے مطابق حب الوطنی کا تڑکا اور پاکستان مخالف مواد ہونے کے باوجود بھی فلم ‘فائٹر’ شائقین کی بڑی تعداد کو اپنی طرف نہیں کھینچ سکی۔

فلم میں ہریتھک روشن اور دیپیکا پڈوکون نے انڈین فضائیہ کے اسکواڈرن لیڈر کا کردار ادا کیا ہے جبکہ انیل کپور کمانڈنگ آفیسر کے روپ میں نظر آئے۔

یش راج پروڈکشن کے تحت ایکشن فلم کو بلاک بسٹر ’پٹھان‘ کے ڈائریکٹر سدھارتھ آنند نے بنایا ہے اور اسے بھارت کے 75 یوم جمہوریہ کے موقع پر 25 جنوری کو ریلیز کیا گیا۔