تازہ ترین

فیس بک اور انسٹاگرام صارفین کا میٹا کی نئی سروس پر شدید ردِ عمل

کیلیفورنیا – فیس بک اور انسٹاگرام صارفین نے دونوں پلیٹ فارمز پر اشتہارات ہٹانے کے لیے لانچ کی جانے والی نئی پیڈ سروس کے شدید ردِ عمل کا اظہار کیا ہے۔

دونوں سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی مالک کمپنی میٹا کے مطابق کمپنی کی جانب سے سبسکرپشن آپشن کی لانچ یورپی یونین کے قواعد و ضوابط پر عملدرآمد کی پیشِ نظر کی گئی ہے۔

نئی تبدیلی کے بعد کروڑوں صارفین کو پلیٹ فارم کے متعلق فیصلہ کرنا ہوگا کہ آیا وہ یہ ایپ اشتہارات کے ساتھ استعمال کرنا چاہیں گے یا پھر اشتہارات کو ہٹانے کے لیے معاوضہ ادا کریں گے۔

تاہم، صارفین نے میٹا کے منصوبے پر شدید ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے پیسے دینے کے بجائے اکاؤنٹ ڈیلیٹ کرنے کی دھمکی دی ہے۔

ماہانہ سبسکرپشن پیکج میں ویب صارفین 10.57 ڈالرز جبکہ آئی او ایس اور اینڈرائیڈ صارفین کو 13.75 ڈالرز ادا کرنے ہوں گے۔

میٹا کے اس فیصلے پر ردِ عمل دیتے ہوئے ایک صارف نے ایکس (سابقہ ٹوئٹر) پر لکھا کہ اس کے لیے ادائیگی کون کرے گا؟ جبکہ ایک صارف نے لکھا ’الوداع‘۔

ایک اور ایکس صارف نے لکھا کہ ایک سوشل میڈیا پلیٹ فارم کو استعمال کرنے کے لیے ہر مہینے 10 یورو کون ادا کرے گا۔

ایک صارف نے میٹا سربراہ مارک زکر برگ کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایکس سربراہ ایلون مسک کی نقل کر رہے ہیں۔ براہ مہربانی تھوڑے تخلیقی ہوجائیں۔