تازہ ترین

پی ٹی آئی کا لانگ مارچ: عمران خان پنجاب میں داخل، لاہور اور کراچی میں صورتحال کشیدہ

سلام آباد (سن نیوز)پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کی کال پر پنجاب اور خیبر پختونخوا سے تحریک انصاف کے کارکن اسلام آباد کی طرف رواں دواں ہیں جبکہ کراچی میں نمائش چورنگی پر کارکنوں اور پولیس کے درمیان چھڑپیں ہوئی ہیں۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے قافلے کے ہمراہ صوابی سے اسلام آباد کی جانب سفر شروع کیا اور اب وہ پنجاب میں داخل ہوچکے ہیں۔اس حوالے سے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا بیان سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ہم پنجاب میں داخل ہوچکے ہیں، اب اسلام آباد کی جانب بڑھیں گے، امپورٹڈ سرکار کا جبر و فسطایت کا کوئی حربہ ہمیں ڈرا نہیں سکتا ، نہ ہی یہ ہمارے مارچ کا راستہ روک سکتا ہے۔‘پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے لانگ مارچ کے سلسلے میں کراچی کی نمائش چورنگی پر بھی کارکن جمع ہوئے جہاں صورتحال کشیدہ ہوگئی ہے۔کراچی میں نمائش چورنگی پر شام کو کشیدگی اس وقت شروع ہوئی جب مشتعل مظاہرین نے ایک پولیس موبائل کو نذرآتش کردیا جبکہ پتھراؤ سے ایس پی سمیت کئی پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔پولیس اہلکاروں نے ہوائی فائرنگ کی تاہم مظاہرین کی تعداد مزید بڑھتی گئی۔ شارع قائدین پر خداداد کالونی چورنگی اور نورانی چورنگی پر بھی ہنگامہ آرائی جاری ہے۔اطلاعات کے مطابق تحریک انصاف کےکارکنان کے پتھراؤ سے غیرملکی خبرایجنسی کے فوٹوگرافر آصف حسن زخمی ہوئے۔لاہور کو دوسرےشہروں سے ملانے والے6اہم اوربڑے راستےمکمل طور پر بند لاہور میں ٹھوکر نیاز بیگ کے مقام پر پولیس نے موٹر وے بند کرکے بعض ٹرک ڈرائیوروں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ لاہور کو دوسرےشہروں سے ملانے والے 6 اہم اوربڑے راستےمکمل طور پر بندکر دیے گئے ہیں جس کی وجہ سےکوئی گاڑی شہر سےباہر نہیں جا پا رہی، پولیس کی بھاری نفری لوگوں کو ایک جگہ جمع بھی نہیں ہونے دے رہی۔وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ راستوں کی بندش سے شہریوں کی مشکلات کا پورا احساس ہے، مشکلات پر شہریوں سے معذرت خواہ ہوں، ملکی مفادات کو سامنے رکھ کر عوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے اقدامات کیے ہیں، بڑے قومی مقصد کے حصول کیلئے ایسی تکلیف کوئی حیثیت نہیں رکھتی، عمران خان اوران کے حواری وطن عزیز کی بنیادوں کو کھوکھلا کر رہے ہیں، دھرنا سیاست یا مارچ سے پاکستان کو آگے نہیں لے جایا جا سکتا۔لاہور کے علاقے بتی چوک پر پی ٹی آئی کے کارکنوں پر شیلنگ کی گئی، پی ٹی آئی کے کارکنوں نے رکاوٹیں ہٹا دیں جس کے بعد بتی چوک کے مقام پر پی ٹی آئی کا مارچ روکنے کیلئے پولیس نے شیلنگ کی اور متعدد کارکنوں کو گرفتار کر لیا۔پولیس نے ڈاکٹر یاسمین راشد کی گاڑی کو روکا، پولیس اہلکاروں کی ڈاکٹر یاسمین راشد اور ان کے ساتھ بیٹھی خاتون کیساتھ تلخی بھی ہوئی۔پی ٹی آئی کے رہنما حماد اظہر بھی بتی چوک پہنچے۔ گاڑی آگے بڑھانے پر پولیس نے پولیس نے ڈاکٹر یاسمین راشد کی گاڑی پر لاٹھی چارج کردیا جس کے نتیجے میں یاسمین راشد کی گاڑی کی ونڈ اسکرین ٹوٹ گئی۔ٹھوکر نیاز بیگ موٹروےکی جانب جانے اور آنے والےتمام خارجی اور داخلی راستے بند ہیں، ملتان روڈ سے موٹروےکو جانے والے ٹرکوں کی کئی کلو میٹر لمبی قطاریں لگ گئیں۔ پولیس کی بھاری نفری ٹھوکر نیازبیگ اورموٹروے کے اطراف تعینات ہے۔ڈاکٹر یاسمین راشد اور عندلیب عباس کو پولیس نے حراست میں لینے کے کچھ دیر بعد رہا کردیا۔
ڈاکٹر یاسمین راشد اور عندلیب عباس کو پولیس کی گاڑی سے اتار دیا گیا جس کے بعد دونوں خواتیں وہاں سے روانہ ہوگئیں۔تحریک انصاف کے رہنما ابرارالحق نے راوی پُل پر جیو نیوز سے گفتگو میں کہا کہ امپورٹڈ حکومت اس وقت مودی والا کردار ادا کررہی ہے، ہماری ہلال احمرکی ٹیم جو دوست زخمی ہیں انھیں فرسٹ ایڈفراہم کررہی ہے، ہم سب کے سب اسلام آباد پہنچیں گے۔