تازہ ترین

قومی اسمبلی اجلاس: نگراں وزیراعظم کی سمری صدر کو دوبارہ ارسال

اسلام آباد – قومی اسمبلی کے اجلاس کے لیے نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے سمری صدر مملکت کو دوبارہ ارسال کردی۔

نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق عام انتخابات کے نتائج جاری ہونے کے بعد ملک کی سولہویں قومی اسمبلی کا افتتاحی اجلاس بلانے کے معاملے میں صدر مملکت کی جانب سے اعتراض عائد کرکے سمری واپس بھجوائی گئی تھی، تاہم نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے صدر مملکت کو سمری ایک بار پھر ارسال کردی ہے۔

نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کو قومی اسمبلی اجلاس طلب کرنے کا اختیار بھی دے دیا ہے۔۔

نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی جانب سے صدر مملکت عارف علوی کو ارسال کی گئی سفارشات میں آئین کے تحت اسمبلی اجلاس بلانے کی تجویز کے ساتھ مزید کہا گیا ہے کہ آئین کے تحت انتخابات کے 21 دن کے اندر اجلاس طلب کرنا آئینی ڈیڈ لائن ہے۔ صدر مملکت آئین میں درج ڈیڈ لائن کے مطابق قومی اسمبلی کا اجلاس بلائیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ صدر مملکت کو سمری ارسال کیے جانے کے علاوہ قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کے متبادل انتظامات بھی کیے گئے ہیں۔ قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے بھی نگراں وزیر اعظم کو سمری ارسال کی ہے جو کہ وزارت پارلیمانی امور کی جانب سے دی گئی ہے تاہم یہ سمری واپس سیکرٹریٹ کو موصول ہوگئی۔

نگراں وزیر اعظم نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کو آئینی ڈیڈ لائن گزرنے پر اجلاس بلانے کا اختیار دے دیا ہے جس پر قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے آئینی ڈیڈ لائن پوری ہونے پر اجلاس بلانے کا اصولی فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے حوالے سے رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ قومی اسمبلی اجلاس کا نوٹی فکیشن بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب جا ری کیے جانے کا امکان ہے۔