تازہ ترین

سمندر پار پاکستانی ہمارے ملک کا قیمتی اثاثہ ہیں، انوار الحق کاکڑ

اسلام آباد – نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑنے مختلف اشیا کی اسمگلنگ کی روک تھام کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سمندر پار پاکستانی ملک کا قیمتی اثاثہ ہیں۔ انوار الحق کاکٹر کا کہنا تھا کہ معیشت کے استحکام کے لیے ان کی گراں قدر خدمات ہیں، سمندر پار پاکستانیوں کو ہوائی اڈوں پر تمام سہولیات فراہم کی جائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو اپنی زیر صدارت ملکی معیشت کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر، نگران وزیر تجارت گوہر اعجاز، نگران وزیر داخلہ سرفراز احمد بگٹی، نگران وزیر اطلاعات و نشریات مرتضی سولنگی، مشیر وزیراعظم احد چیمہ، گورنر اسٹیٹ بینک جمیل احمد، چیئرمین ایف بی آر ملک امجد زبیر ٹیوانا، وفاقی سیکریٹریز اور متعلقہ اداروں کے اعلی افسران بھی شریک تھے۔

اجلاس میں نجی شعبے کے معروف صنعت کاروں نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں وزیراعظم کو ملکی معیشت کے حالیہ اعشاریوں سے آگاہ کیا گیا اور ملکی معیشت کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں مختلف اشیا کی اسمگلنگ کی روک تھام کے لیے موثر حکمت عملی کی تشکیل کے حوالے سے مشاورت کی گئی۔ اجلاس میں ایران کے ساتھ تبادلے کی تجارت کی موجودہ پیشرفت کا بھی جائزہ لیا گیا۔

تاجر برادری کے نمائندوں نے وزیراعظم کو ملکی معیشت کی بحالی کے لیے نگران حکومت کے ساتھ مکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔ اجلاس میں ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت کے تناظر میں فارن ایکسچینج کے غیر قانونی کاروبار کی روک تھام پر تفصیلی گفتگو کی گئی۔اجلاس میں وزیراعظم نے امیگریشن اور کسٹمز حکام کو سمندر پار پاکستانیوں کو ہوائی اڈوں پر تمام سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعظم نے کہا کہ سمندر پار پاکستانی ہمارے ملک کا قیمتی اثاثہ ہیں اور ان کی ملکی معیشت کے استحکام کے لیے گراں قدر خدمات قابل تعریف ہیں۔اجلاس میں وزیراعظم کو ملکی معیشت کے حالیہ اشاریوں کے بارے میں اور معیشت کو مستحکم کرنے کی ممکنہ حکمت عملیوں کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔اجلاس میں پاکستان کی تاجر برادری اور صنعتی شعبے کے معروف افراد بھی شریک تھے، جنہوں نے وزیراعظم کو ملکی معیشت کے استحکام کے لیے اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔