تازہ ترین

وزن میں کمی کا علاج بلڈ پریشر کم کرنے میں مفید قرار

نیو ہیون – دو نئے مطالعوں میں وزن کم کرنے کے لیے مخصوص علاج کو اپنانے والے افراد کے بلڈ پریشر میں واضح کمی کا مشاہدہ کیا گیا ہے۔

امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن جرنل ہائپر ٹینشن میں پیر کے روز شائع ہونے والی پہلی تحقیق میں بتایا گیا کہ زیادہ وزن یا مٹاپے کا شکار وہ افراد جنہوں نے نو ماہ تک ٹرزپاٹائڈ نامی دوا کا استعمال کیا تھا، ان کا بلڈ پریشر واضح طور پر کم ہوا تھا۔

جبکہ دوسری تحقیق میں دیکھا گیا گیا کہ وہ افراد جنہوں نے بیریئٹرک سرجری کروائی تھی ان کے بلڈ پریشر میں پانچ سال بعد صرف ادویات پر انحصار کرنے والوں کے مقابلے میں واضح بہتری آئی تھی۔

ییل یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے ماہرِ امراض قلب ڈاکٹر ہارلن کرُمہولز کے مطابق ان دو مطالعوں میں مختلف علاجوں اور ان کے نتائج کا جائزہ لیا گیا لیکن دونوں نے مجموعی طور پر اس خیال کے لیے مضبوط دلائل پیش کیے کہ مٹاپے کا مؤثر علاج دل کی مجموعی صحت کی بہتری کے لیے اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگرچہ مٹاپے اور بلند فشار خون، ذیا بیطس اور دیگر قلبی مسائل جیسی بیماریوں کے درمیان تعلق بہت پرانا ہے۔ لیکن یہ نیا دور ہے اور اب ہمارے پاس ایسے وسائل (انسداد مٹاپہ ادویات اور سرجری) ہیں جو انتہائی مفید ہیں۔