تازہ ترین

ہیپاٹائٹس سے متعلق عوام میں پائے جانے والے غلط نظریات

ہیپاٹائٹس دراصل جگر کی سوزش کو کہا جاتا ہے جو کہ عام طور پر وائرل انفیکشن یا الکوحل کی کھپت کی وجہ سے ہوتا ہے۔ تاہم یہ زہریلے مادوں، منشیات اور بعض مخصوص طبی حالات کے نتیجے میں بھی ہو سکتا ہے، بشمول مدافعتی نظام کی بدعملی۔

ہیپاٹائٹس کی پانچ اہم اقسام ہیں: اے، بی، سی، ڈی، اور ای۔ ہیپاٹائٹس بی اور سی سب سے زیادہ عام ہیں۔ اگرچہ یہ بیماری عام ہے، لیکن بہت سے غلط نظریات ہیں جو عام طور پر ہیپاٹائٹس سے وابستہ ہیں۔ اس مضمون میں ہم ان پر بات کریں گے۔

1) ہیپاٹائٹس کی تمام اقسام یکساں طور پر سنگین ہیں۔
2) ہیپاٹائٹس سی نایاب ہے۔

3) ہیپاٹائٹس سی والی مائیں بچوں کو دودھ نہیں پلا سکتیں

4) محض بوسہ لینے یا ہاتھ پکڑنے سے ہیپاٹائٹس پھیل سکتا ہے

5) ہیپاٹائٹس سی والے لوگ ازدواجی تعلقات قائم نہیں کر سکتے

6) ہیپاٹائٹس والے تمام لوگوں کو یرقان (jaundice) ہوتا ہے

7) ہیپاٹائٹس جینیاتی ہے

8) ہر قسم کے ہیپاٹائٹس کے لیے ویکسین موجود ہے: یہ سچ نہیں ہے. فی الحال صرف ہیپاٹائٹس اے اور بی کے لیے ویکسین موجود ہیں

9) ہیپاٹائٹس سی وائرس انسانی جسم سے باہر زندہ نہیں رہ سکتا

10) متاثرہ شخص دو بار ہیپاٹائٹس سی کا شکار نہیں ہو سکتا

11) ہیپاٹائٹس سی کی دوائیوں کے مضر اثرات ہوتے ہیں