تازہ ترین

سات ماہ کے دوران کرنٹ اکاؤنٹ خسارے اور درآمدات میں کمی

اسلام آباد – سات ماہ کے دوان برآمدات میں اضافہ ہوگیا جب کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ، درآمدات اور ریمی ٹینسز میں کمی آگئی۔ میڈیا کے مطابق وزارت خزانہ نے ماہانہ معاشی آؤٹ لک جاری کردی جس میں بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے سات ماہ میں ترسیلات زر میں 50 کروڑ ڈالر کی کمی واقع ہوئی، رواں مالی سال کے سات ماہ میں 15 ارب 80 کروڑ ڈالر کی ترسیلات زر موصول ہوئیں، گزشتہ مالی سال اسی عرصے میں 16 ارب 30 کروڑ ڈالر کی ترسیلات تھیں۔

رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے 7 ماہ میں برآمدات میں 9.3 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا، برآمدات 16.4 ارب ڈالر سے بڑھ کر 18 ارب ڈالر تک پہنچ گئیں، درآمدات میں جولائی تا جنوری 11.1 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی، درآمدات 33.5 ارب ڈالر سے کم ہوکر 29.8 ارب ڈالر تک رہیں۔

رپورٹ کے مطابق کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 7 ماہ میں 71.2 فیصد کی کمی ہوئی، براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں سات ماہ میں 21.4 فیصد کی کمی ہوئی، زرمبادلہ کے ذخائر 9 ارب 25 کروڑ ڈالر سے بڑھ کر 13 ارب ڈالر سے تجاوز کرگئے۔

معاشی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایف بی آر محصولات میں سات ماہ میں 29.8 فیصد کا اضافہ ہوا، رواں مالی سال کے 7 ماہ میں نان ٹیکس آمدنی میں 116.5 فیصد اضافہ ہوا، رواں مالی جولائی تا جنوری مالیاتی خسارے میں 43 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا، رواں مالی کے 7 ماہ میں پرائمری بیلنس میں 103.6 فیصد کا اضافہ ہوا،رواں مالی سال جولائی تا جنوری مہنگائی کی شرح 28.7 فیصد رہی۔