تازہ ترین

ملک میں زیادہ ایک ہزار روپے کے جعلی نوٹ سرکولیشن میں ہیں، اسٹیٹ بینک

کراچی – اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے ڈائریکٹر فنانس قادر بخش کا کہنا ہے کہ ملک میں سب سے زیادہ ایک ہزار روپے کے جعلی نوٹ سرکولیشن میں ہیں۔

اپنے ویڈیو بیان میں انکا مزید کہنا تھا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں اور مخلتف بینکوں سے مجموعی طور پر 35 ہزار کی تعداد میں جعلی کرنسی نوٹ رواں برس جمع کرائے گے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو سال میں ملک بھر سے جعلی نوٹوں کے 20 ہزار کرنسی نوٹ پکڑے گئے ہیں ایف آئی اے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے ادراوں نے رواں سال 25 ہزار مختلف مالیت کے جعلی کرنسی نوٹ اسٹیٹ بینک کو جمع کرائے ہیں۔

ڈائریکٹر فنانس قادر بخش نے کہا کہ گزشتہ دو سال سے تقریبا جعلی نوٹوں کی تعداد تقریبا برابر ہےجعلی نوٹوں میں 60 سے 70 فیصد نوٹ ایک ہزار روپے کا پکڑا گیا ہے ملک بھر میں گزشتہ ایک سال سے کسی بھی اے ٹی ایم سے جعلی نوٹ کی شکایت مرکزی بینک کو نہیں کی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسٹیٹ بینک نے اے ٹی ایم سے جعلی نوٹ کے حوالے سے ای میل ایڈریس دیا ہوا ہےاگر کسی بینک کے اے ٹی ایم سے جعلی نوٹ نکلتا ہے تو اس پرکرنسی نوٹ مالیت کا 100 گنا جرمانہ کیا جائیگا۔ انکا کہنا ہے کہ بینکوں کو اے ٹی ایم مشین میں ڈالے گیے نوٹ کی سی سی ٹی وی ویڈیو 90 دن تک رکھنا لازم ہے۔