تازہ ترین

فرانسیسی سفارتکاروں کا غیر معمولی اقدام، صدر میکرون کی جانب سے کٹوتیوں کے خلاف ہڑتال

اسلام آباد(سن نیوز)سفارت کاروں نے 20 سال میں پہلی بار صدر ایمانوئل میکرون کی طرف سے تجویز کردہ اصلاحات اور بجٹ میں کٹوتیوں کے خلاف احتجاج کے لیے ہڑتال کی۔غیر معمولی ہڑتال کو فرانسیسی وزارت خارجہ میں اس غیر معمولی واقعے کو Quai d’Orsay کا نام دیا گیا ہے، 6 یونینوں اور 500 نوجوان سفارتکاروں کے ایک گروپ نے میکرون کی اصلاحات کے خلاف احتجاج کے لیے 2 جون کو ہڑتال کی کال دی۔سفارتکاروں کے اس اقدام سے سفارتی کیریئر کا ڈھانچہ تبدیل ہو جائے گا۔ ہڑتال کرنے والوں میں سے بہت سے لوگوں کا خیال ہے کہ اس کا مطلب ہے فرانسیسی پیشہ وارانہ سفارت کاری کا خاتمہ۔فرانس میں امریکہ اور چین کے بعد دنیا کا تیسرا سب سے بڑا سفارتی نیٹ ورک ہے، جس میں وزارت خارجہ کے تقریباً 1800 سفارت کار اور تقریباً 13500 اہلکار کام کر رہے ہیں۔

 

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں