تازہ ترین

گریڈ 18 کا سرکاری افسر لڑکیوں کو ہراساں کرنے پر پکڑا گیا تو “آئی ایم سوری” کہہ کر دوڑ لگادی، ویڈیو سامنے آگئی

اسلام آباد( سن نیوز)اسلام آباد میں خواتین کو ویڈیو بناکر ہراساں کرنے کے کیس میںویڈیو وائرل ہونے پر اسلام آباد پولیس نے خواتین سے رابطہ کرکے واقعے کی ایف آئی آر درج کرلی۔نجی ٹی وی کے مطابق ہراساں کرنے والا رانا اظہر سینیٹ کی قانون سازی برانچ کا گریڈ 18 کا ملازم ہے۔ایف آئی آر کے مطابق خواتین نے اے ٹی ایم پر ان کی ویڈیو بنا کر ہراساں کرنے والے شخص کی ویڈیو بنائی، خواتین نے ویڈیو بنانے والے شخص سے پوچھا کہ وہ ان کی ویڈیو کیوں بنارہا ہے۔ایف آئی آر کے مطابق ہراساں کرنے والےشخص نے سوری کہہ کر ویڈیو بنانے کا اعتراف کیا اور دوڑ لگادی۔پولیس نے ہراسانی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔نجی ٹی وی جیو کے مطابقدوسری جانب خواتین کو ہراساں کرنے والا شخص رانا اظہر سینیٹ کا ملازم نکلا۔ سینیٹ حکام کا کہنا ہے کہ ویڈیو بنانے والا رانا اظہر سینیٹ کی قانون سازی برانچ کا گریڈ 18 کا افسر ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں