تازہ ترین

46 فیصد پاکستانی عمران خان کے خود کو برانڈ کہنے اور کرپٹ نہ ہونے کے بیان سے غیر متفق

اسلام آباد( سن نیوز)پاکستان میں 46 فیصد لوگ وزیراعظم عمران خان کے خود کو برانڈ کہنے اور کرپٹ نہ ہونے کے بیان سے متفق نہیں ہیں۔ پلس کنسلٹنٹ کا عوام کی آرا پر مبنی نیا سروے سامنے آیا ہے جس میں 46فیصد پاکستانیوں نے وزیراعظم عمران خان کے خود کو برانڈ کہنے اور کرپٹ نہ ہونے کے بیان سے متفق نہ ہونے کا اظہار کیا ہے تاہم سروے میں 19فیصد پاکستانیوں نے اس بیان سے مکمل اتفاق کیا ہے۔سروے نتائج کے مطابق 62 فیصد عوام ٹکٹوں کی غلط تقسیم کو خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات میں پی ٹی آئی کی شکست کی بڑی وجہ سمجھتے ہیں جبکہ 30فیصد کرپشن اور بُری کارکردگی کو تحریک انصاف کے ہارنے کی وجہ بتاتے ہیں۔ البتہ خیبرپختونخوا کے شہریوں کی رائے قومی سطح سے مختلف نظر آئی اور 65 فیصد نے پی ٹی آئی کی شکست کی وجہ صوبے میں کرپشن اور بُری کارکردگی کو کہا۔ اس کے علاوہ 61فیصد پاکستانی فارن فنڈنگ کیس میں عدالت کی جانب سے کلیئر قرار دینے کے حکومتی وزراکے بیان کو بھی حقائق کے منافی سمجھتے ہیں۔ سروے میں سانحہ مری کو بھی 77فیصد پاکستانی عوام نے ناگہانی آفت قرار دیا۔دوسری جانب ملکی مسائل پر کیے گئے سوالات کے جوابات میں 84فیصد پاکستانیوں نے مہنگائی کو ملک کا سب سے بڑا مسئلہ قرار دیا جبکہ 80فیصد کے نزدیک بے روزگاری اور 37فیصد افراد کرپشن کو ملک کا اہم مسئلہ قرار دیتے نظر آئے۔ گزشتہ 3ماہ میں مہنگائی میں اضافہ کے سوال پر 99 فیصد نے شدید پریشانی کا اظہار بھی کیا، ملک کے خراب معاشی حالات کا ذمہ دار 65 فیصد پاکستانی موجودہ حکومت کی پالیسیوں کو ٹھہراتے ہیں جبکہ 29 فیصد سابقہ حکومتوں کے قرضوں کو اس کا ذمہ دار قرار دیتے ہیں۔سروےے میں لوٹی گئی ملکی دولت واپس لانے میں 63فیصد پاکستانیوں نے حکومت کو ناکام قرار دیا۔

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں